مرکز

مزید مضامین

  • اس مضمون میں اے آئی آر ایس ڈبلیو ای ای ای میں شرکت کر چکیں انوجا پٹنائک ایس ٹی ای ایم کاروباری پیشہ وروں اور چھوٹے اور متوسط ڈیری کسانوں کو با اختیار بنانے سے متعلق اپنے کاموں کے بارے میں بات کررہی ہیں۔

  • مناسی کُلکرنی کا نیکسَس سے امداد یافتہ اسٹارٹ اپ نہ چبھنے والا ایسا آلہ تیار کرنے میں مصروف ہے جس سے خون میں شکر کی سطح کو جلد اور بنا تکلیف کے ناپا جا سکے گا۔ 

  • فلکی طبیعیات کی ماہر پرجوَل شاستری سائنس خصوصی طور پر طبیعیات کے شعبے میں مردوں اور خواتین کے درمیان تفاوت کو کم کرنے کے لیے کام کر رہی ہیں۔

  • رَٹگَرس یونیورسٹی میں شیتل پاؤلو گوداد کا پروجیکٹ، دی اسٹیٹ یونیورسٹی آف نیوجرسی مشرقی بحر ہند کے قدیم جغرافیائی حالات کے مطالعے اورزمین کی چٹانوں اوراس کے کیمیائی مطالعے  پر توجہ دیتا ہے۔

  • ڈمپل ورما کا وِزروبو، روبوٹِکس میں اختراعی اور تخلیقی خیالات کے ذریعے ایس ٹی ای ایم شعبہ جات کی تعلیم دینے کا کام کرتا ہے۔ 

  • فل برائٹ وظیفہ یافتہ اُما راما کرشنن آبادیاتی جینیات کا استعمال کرتے ہوئے شیر کی آبادی کو تحفظ فراہم کرنے کی ذمہ داری نبھانے کا کام کر رہی ہیں۔  

  • سِلکی اگروال کی کمپنی جیو کارٹ، جی پی آر ٹیکنالوجی کا استعمال کرکے ارضیاتی تحقیق کے شعبے میں اختراعی خدمات بہم پہنچاتی ہے۔ 

  • نیکسَس سے تربیت یافتہ شراونی لڈکٹ انڈیا میں غذائی اجناس کی بربادی کو کم کرنے کی تکنیک پر کام کر رہی ہیں۔

  • مور فیڈو کی شریک بانی مانّیا جھا سائنس، ٹیکنالوجی، انجینئرنگ اور میتھمیٹکس یعنی ایس ٹی ای ایم شعبہ جات میں کاروباری پیشہ وری شروع کرنے کے اپنے تجربے کو اس مضمون میں شیئرکر رہی ہیں۔ 

  • سوربھ لڈھا کا ااسٹارٹ اپ ڈوکسل تعمیراتی سائٹوں کی نگرانی کے لیے روبوٹکس، ڈرون اور مصنوعی ذہانت  کا استعمال کرتا ہے تاکہ تعمیراتی منتظمین کو  وقت پر اور بجٹ کے اندر پروجیکٹوں کی تکمیل میں مدد مل سکے۔

  • ہندنژاد امریکی سائنسداں ساکیت نو لکھا کی دلچسپی کا میدانعلم الحیات اورکمپیوٹر سائنس کے درمیان منفرد متوازی عمل کا مطالعہ ہے۔  

  • اختراع ساز اورایم آئی ٹی کے ایسوسی ایٹ پروفیسر رمیش راسکر بتاتے ہیں کہ ان کی ایجادات اوران کے اقدامات کس طرح تکنیک کا استعمال کرکے حقیقی دنیا کے مسائل کو حل کرنے میں مدد کر سکتے ہیں۔ 

  • فل برائٹ ۔نہرو اسکالرامت ٹنڈن جنوبی ایشیا کے لیے مانسون کی پیش گوئی میں بہتری لانے کے لیے کوشاں ہیں۔ 

  • سَم پریتی بھٹا چاریہ نے گہرے پانی میں کام کر سکنے والے ڈرون تیار کیے ہیں جو راحت اور بچا ؤ کی کاروائی میں ، تفتیش میں اور سمندر کے اندر تابکاری کے رساؤ کو روکنے میں مد د کر سکتے ہیں۔

صفحات

ویڈیوز اسپَین ویڈیو گیلری