مرکز

اختراعات والا ملک

نایاب کاروں سے لے کرفریڈم رائڈس تک اور معیاری گھروں سے لے کر مائکروپروسیسر تک، ہینری فورڈ میوزیم آف امیریکن اننوویشن مختلف قسم کی نمائشوں کا اہتمام کرتا ہے جس سے امریکی قوم کی اختراع پسندی اوراس کی تخلیقی صلاحیتیں اجاگر ہوتی ہیں۔ 

ریاست مشی گن کے شہر ڈیئر بورن  میں واقع  ہینری فورڈ میوزیم آف امیریکن اننوویشن  سیاحوں کواس اختراع پسندی، وسائل سے مالا مال ہونے کی کیفیت او ر تخلیقی صلاحیت سے روشناس کرتا ہے جس نے امریکہ کی تشکیل میں مدد کی ہے۔عجائب گھر کا مقصد بہتر مستقبل کی خاطر لوگوں کو تحریک دینے کے لیے امریکی اختراع سازی میں اہم لمحات کو برقرار رکھنا ہے۔

خلا نوردی کو ممکن بنانے والی آٹوموبائل اوردیگر اہم ٹیکنالوجی کی تاریخ سے لے کر امریکہ کی مالامال تاریخ کی تحقیق اور تھامس ایڈیسن کی نجی تجربہ گاہ تک ہینری فورڈ میوزیم ناقابل یقین اختراعات کے علاوہ ایسے افراد کی کہانیاں بیان کرتا ہے جنہوں نے ملک کووہ بلندی عطا کی جہاںآج ہم اسے دیکھ پا رہے ہیں۔ 

 ہینری فورڈ میوزیم میں عظیم اختراع پردازوں کی کہانیاں تفاعلی نمائشوں اور نایاب تاریخی فن پاروں کے وسیع مجموعے کے ذریعہ پیش کی گئی ہیں۔لہٰذا یہاں آنے والے سیاح امریکہ کے بعض اہم ترین مفکرین اور اختراع پردازوں کو خراج عقیدت پیش کر سکتے ہیں۔ سیاح میوزیم کی اہم نمائشوں سے نہ صرف تحریک پا سکتے ہیں بلکہ سیکھنے کے حقیقی عملی تجربے کو دریافت بھی کر سکتے ہیں۔میوزیم میں مقام اجتماع کے نائب صدر  جان نیلسن کہتے ہیں ’’ہینری فورڈ میوزیم آف امیریکن اننوویشن، ان تکنیکی اور معاشرتی خیالات اوراختراعات کو پیش کرتا ہے جنہوں نے ہماری دنیا کو بدل ڈالا ہے اورہمیشہ ہی تحریک کا باعث بنتے رہے ہیں ۔ یہ واحد جگہ ہے جہاں سیاح دنیا بھرکی اعلیٰ قسم کی موٹر گاڑیوں کے مجموعے دیکھ سکتے ہیں۔ اس کے علاوہ سیاح ان کی ابتدائی برسوں کی ترقی کی تاریخ سے واقف ہو سکتے ہیں۔ سیاح یہاں امریکی صدور کے ذریعے استعمال کی گئی  لیموسین گاڑیوں کے وسیع سلسلے کو بھی دیکھ سکتے ہیں اور ایک طاقت ور تبدیلی کی نمائندگی کر رہے فن پاروں کے بے مثال مجموعے کے گواہ بن سکتے ہیں۔‘‘ 

میوزیم اپنے ۴ مقامات کی بدولت اپنی موجودگی درج کرواتا ہے۔یہ مقامات ہیں : ہینری فورڈ میوزیم آف امیریکن اننوویشن،گرین فیلڈ ویلج،فورڈ روگ فیکٹری ٹوراوربینسن فورڈ ریسرچ سینٹر۔یہیں  ہینری فورڈ اکیڈمی بھی واقع ہے جو ایک  پبلک چارٹر ہائی اسکول ہے۔ ہینری فورڈ میوزیم امریکہ میں موجود سب سے بڑے انڈور۔ آؤٹ ڈوراحاطوں میں سے ایک ہے۔

یہ میوزیم معروف امریکی صنعت کار اور آٹو موبائل صنعت کے پہل کار ہینری فورڈ سے منسوب ہے جنہوں نے فورڈ موٹر کمپنی قائم کی تھی۔ گرچہ انہوں نے  آٹو موبائل یا  اسمبلی لائن  ایجاد نہیں کی تھی مگر سب سے پہلے ایسی موٹر گاڑیوں کو شروع کرنے میں جنہیں متوسط طبقے کے بعض امریکی شہری ہی ۲۰ ویں صدی کے ابتدائی برسوں میں خریدنے کے اہل تھے ، فورڈ کا کردار کافی اہم تھا۔ جب فورڈ موٹر کمپنی نے ۱۹۰۸ ء میں افسانوی ماڈل  ٹی آٹو موبائل امریکی بازار میں متعارف کیا تواس سے عوام کے لیے آمد و رفت کا ایک سستا متبادل فراہم ہوگیا ۔ اور یہ امریکہ کی جدیدیت کے دَور کی ایک نمایاں علامت بن گیا۔ موٹر گاڑیوں کی صنعت میں فورڈ کے تعاون کو  ڈرائیونگ امیریکہ نامی نمائش میں نمایاں طور پر پیش کیا گیا ہے۔یہ میوزیم کی قابل دید نمائشوں میں سے ایک ہے۔ اس نمائش میں ۱۰۰ سے زیادہ تاریخی گاڑیاں اور مختلف سرگرمیاں انجام دینے والے ۲۰انٹر ایکٹِوٹچ اسکرین،ویڈیو انٹرویو ، تصویریں اور موٹر گاڑیوں کی حیران کن تاریخ کے بارے میں معلومات پیش کی گئی ہیں۔

۱۹۴۷ ء میں فورڈ کے انتقال کے بعد بھی میوزیم کے عملے نے مستقبل کو تحریک دینے کی غرض سے ماضی کے تحفظ کے ان کے تصور کا احترام اور اس کی توسیع کو جاری رکھا۔۲۰۰۴ ء میں فورڈ موٹر کمپنی نے میوزیم کے ساتھ ساتھ دی فورڈ روگ فیکٹری ٹور کے نام سے ایک نئی شراکت کا آغاز کیا ۔ اس کے تحت سیاحوں کے تجربہ کرنے کے لیے مکمل طور پر موقع پر ہی موٹر گاڑیاں تیار کرنے والی ایک سہولت شامل ہے۔ یہ خود رہنمائی والا ۵ حصوں پر مبنی ایک پروگرام ہے جو دکھاتا ہے کہ فورڈ ایف ۱۵۰  ٹرک کس طرح حقیقی طور پر ٹھیک اسمبلی لائن پر تیار کیے جاتے ہیں۔۱۵ منٹ کی مسافت پر واقع فیکٹری تک سیاحوں کو لے جانے کے لیے یہاں بسوں کا انتظام رہتاہے ۔

سنہ ۲۰۱۴ ء میں ہینری فورڈ نے میوزیم کی شراکت داری میں اپنی سب سے پہلی ٹی وی سیریز  دی ہینری فورڈ س اننوویشن نیشن کا آغاز کیا ۔ایمی ایوارڈ یافتہ نصف گھنٹے کے اس پروگرام کو  کولمبیا براڈکاسٹنگ سسٹم (سی بی ایس)پر ہر سنیچر کی صبح دیکھا جا سکتا ہے۔ اس پروگرام میں موجودہ دورکے ان اختراع پردازوں کو پیش کیا جاتا ہے جو معمول سے ہٹ کر خیال و فکر کے لیے خود کو چیلنج کرنے والے اور ایک بہتر مستقبل کے لیے نئے حل تلاش کرنے والے ہوتے ہیں۔اس پروگرام کی ہر قسط ہینری فورڈ میوزیم کے نمونوں ، منفرد تجربوں اور مستقبل میں منعقد ہونے والی خصوصی نمائشوں اور پروگراموں کو نمایاں کرتی ہے۔ 

اس کا دوسرا پروگرام ہینری فورڈ کا سالانہ نیشنل اننوویشن کنوینشن ہے جہاں پورے امریکہ سے اختراع پردازوں اور کاروباری پیشہ وروں کی نئی نسل اپنے بہترین خیالات پیش کرنے کے لیے اکٹھا ہوتی ہے۔ یہ پروگرام پورے ملک سے یوتھ اننوویشن اینڈ انٹرپرینرشپ مقابلوں کے فاتحین کواپنی سخت محنت کے نتیجے میں پیدا ہوئی اشیاء کی نمائش کے لیے ایک پلیٹ فارم عطا کرتا ہے۔ اس سال پورے ملک سے ۵۰۰ سے بھی زیادہ نوجوان اختراع پردازوںنے اس کنونشن میں شرکت کی۔

ہنری فورڈ میوزیم آف امیریکن اننوویشن پورے ہفتے صبح ساڑھے نو بجے سے شام پانچ بجے تک عوام کے لیے کھلا رہتا ہے۔ بالغ افراد کے لیے داخلہ فیس ۱۷ اعشاریہ ۲۵ ڈالر سے ۲۳ ڈالر تک ہوتی ہے ۔ دی فورڈ روگ فیکٹری ٹور پیر سے سنیچر تک صبح ساڑھے نو بجے سے شام پانچ بجے تک کھلا رہتا ہے اور اس کے لیے الگ سے ٹکٹ لینے کی ضرورت ہوتی ہے۔ یہاں بالغ افراد کے لیے ٹکٹ کی قیمت ۱۰ ڈالر سے ۱۸ ڈالر کے درمیان ہوتی ہے۔ 

جیسون چیانگ لاس اینجلس کے سِلور لیک میں مقیم ایک آزاد پیشہ قلمکار ہیں ۔

 

تبصرہ کرنے کے ضوابط